اہم سوال و جواب


بحرانی انٹروینشن سے کیا مراد ہے؟
ایسے حالات میں جب مریض کی زندگی خطرے میں ہو یا مریض کے رویوں سے اہل خانہ پر تباہ کن اثرات مرتب ہو رہے ہوں تو ’’بحرانی انٹروینشن ‘‘ کے سوا کوئی چارہ نہیں رہتا۔ بحرانی انٹروینشن میں ’’ انٹروینشن ایکسپرٹ ‘‘ اپنی ٹیم کے ہمراہ ایک طے شدہ منصوبے تک پہنچتا ہے اور اسے اپنی حفاظت میں لے لیتا ہے۔
بحرانی انٹروینشن کے پسِ پردہ یہ نظریہ ہے کہ جب کسی گھر میں آگ لگی ہو تو’’دیکھنے اور انتظار کرنے‘‘ کی پالیسی ظالمانہ ہو گی۔ خاص طور پر پاکستان میں جہاں نشہ کرنا جرم بھی ہے اور اس جرم کی کڑی سزا مقرر ہے۔ علاج کیلئے مریض کی مرضی کا انتظار مناسب نہ ہو گا۔ نشے کی بیماری میں مریض تو نشہ کر کے دکھ پاتا ہے باقی اہل خانہ بلا وجہ سزا بھگتتے ہیں۔
یورپ اور امریکہ میں قانون اس صورت میں نشہ کرنے پر معترض نہیں ہوتا کہ نشہ قانونی طور پر مارکیٹ سے خریدا ہو اور ادائیگی فرض کے دوران اور ڈرائیونگ سے پہلے نہ کیا جائے۔ لہذا ایسے معاشرے میں کوئی شخص ان حدودو قیود کی پابندی کرے تو نشہ کرنے یا نہ کرنے کا معاملہ اس کی مرضی پر چھوڑ دیا جاتا ہے لیکن وہاں بھی نشہ کرنے والے ان قواعد پر عمل نہیں کرتے۔ جب کوئی نشہ باز ہوتا ہے تو وہ قانون کا پابند نہیں ہوتا، آزاد ہوتا ہے۔
ہمارے مذہب، معاشرے، خاندانی نظام اور حکومت میں کسی فرد کو کسی بھی حالت میں کسی بھی مقدار میں نشہ کرنے کی اجازت نہیں، کجا حالات ایسے ہوں کہ کوئی شخص اندھا دھند نشہ کر کے اپنی زندگی خطرے میں ڈالے ہوئے ہو اور اہل خانہ کو بھی جسمانی، نفسیاتی، معاشی اور روحانی طور پر نقصان پہنچا رہا ہو۔ ایسے میں کوئی سمجھدار انسان مریض کو گھر پھونک کر تماشہ دیکھنے کی اجازت نہیں دے سکتا ہے۔
کرائسسز انٹروینشن جیسا کہ اس کے نام سے ظاہر ہے کہ بحران کی صورت میں کی جاتی ہے۔ اہل خانہ مریض کے مکمل حالات ماہر منشیات کے سامنے رکھتے ہیں اور اسے اپنی ٹیم کے ہمراہ باقاعدہ انٹروینشن کی اجازت دیتے ہیں۔

* کرائسسز انٹروینشن کی کچھ تفصیل بتائیے؟
کسی مریض کے حد سے زیادہ بگڑے ہوئے حالات دیکھ کر اس کے اہل خانہ مل کر فیصلہ کرتے ہیں اور ماہر منشیات سے انٹروینشن کی درخواست کرتے ہیں۔ ماہر منشیات حالات کی تصدیق کرتا ہے اور اس بات کو یقینی بناتا ہے کہ کرائسسز انٹروینشن کا محرک محض مریض کیلئے نشے سے نجات ہے اور اس کے علاوہ کوئی اور ناجائز مقاصد نہیں ہیں۔ کرائسسز انٹروینشن خاص طورپر ان مریضوں کیلئے مناسب سمجھی جاتی ہے جو جسمانی طور پر انتہائی کمزور ہو چکے ہوں، خطرناک اور غیرقانونی حرکات میں ملوث ہوں، تشدد کا مظاہرہ کرتے ہوں، اثاثے بیچ رہے ہوں اور علاج سے انکاری ہوں۔

ماہر منشیات تفصیلی منصوبہ بندی کے تحت اس کے قد بت، طاقت اور اکھڑپن کے بارے میں اندازہ لگاتا ہے، سونے جاگنے کے بارے میں معلومات اکٹھی کرتا ہے، اس کی عادات اور خصائل کے بارے میں جان کاری حاصل کرتا ہے، نشے کی مقدار اور قسم کا پتہ چلاتا ہے، اس کے پرتشد د رویوں کا تجزیہ کرتا ہے، مریض کی طرف سے دیگر خطرات کو پہلے سے بھانپتا ہے اور مریض کے بارے میں ان معلومات کو مناسب ترتیب دیتا ہے۔

 

Contact Us

Got a question ? Write it down, right here; and we will reply within 24 hours.


Dear Dr. Sadaqat Ali,