ادھیڑ عمری کو پہنچنے والے اکثر مردوں پر تو ایک شادی بھی بھاری پڑنے لگتی ہے لیکن یوگنڈا سے تعلق رکھنے والے اس مرد آزاد کو دیکھئے جس نے 50 سال کی عمر میں اکٹھی تین شادیاں کر لی ہیں۔دارلحکومت کمپالا کے نواحی علاقے سے تعلق رکھنے والے اس بے باک شخص کا نام محمد سمندا ہے۔ اس کی ایک شادی 20 سال قبل ہوئی تھی لیکن گزشتہ دنوں جب اس نے دو جواں سال بہنوں کو بیک وقت دلہن بنانے کا فیصلہ کیا تو سوچا کیوں نا پہلی شادی کی بھی تجدید کر لی جائے۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

شادی کی تقریب میں جہاں دونوں بہنوں، 27 سالہ جامیو نکائزہ اور 24 سالہ مستولا نکائزہ نے عروسی جوڑا پہنا تو وہیں پہلی بیوی سلامت نالوووگی بھی پھر سے دلہن بنی۔ سمندا اور سلامت کے پانچ بچوں نے بھی شادی میں شرکت کی اور سب نے مل کر خوب خوشیاں منائیں۔
سمندا کا کہنا تھا کہ شادی کا فنکشن علیحدٰہ علیحدٰہ منعقد کرنے پر بڑا خرچہ ہو جاتا لہٰذا اس نے سوچا کہ ایک ہی فنکشن میں سارا کام نمٹا دیا جائے۔ اس کی نئی دلہنیں اس موقع پر بہت خوش تھیں جبکہ پہلی بیو ی بھی کچھ کم خوش نہیں تھی۔ اس کا کہنا تھا ”میں بہت خوش ہوں کہ میرے خاوند نے ہم تینوں کو ایک ساتھ دلہن بنایا ہے۔ یہ اس بات کی علامت ہے کہ وہ ہمارے ساتھ انصاف کرے گا اور ہمارے حقوق مساوی طور پر ادا کرے گا۔“

Courtesy: ڈیلی پاکستان