Courtesy: اردو پوانٹ

ضلع خیرپور میں خسرہ جیسے موضی مرض کے خاتمے اور احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کے سلسلے میں ایمرجنسی مہم 15 اکتوبر تا 27 اکتوبر 2018 تک جاری رہے گی جس میں 09 ماہ تا 05 سال تک کے بچوں کو خسرہ سے بچائو کے ٹیکے لگائے جائیں گے اس سلسلے میں مہم کو کامیاب بنانے اور عام افراد میں شعور کی بیداری کے حوالے سے آگاہی واک کی گئی واک کی قیادت ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ون ریاض حسین وسان ، عالمی صحت عامہ کے نمائندے جگت ناراتھ گری ، اے ڈی ایچ او ڈاکٹر مشتاق سولنگی اور ڈاکٹر محمد حسین ابڑو نے کی۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

واک میں مختلف اسکولوں کے اساتذہ، طلباء، لیڈی ہیلتھ ورکروں، سماجی تنظیموں کے نمائندوں ، ڈبلیو ایچ او، ڈاکٹروں ، پیرا میڈیکل اسٹاف اور دیگر شہریوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔ بعد ازاں کے ایم سی اسپتال کے لیکچر ہال میں سیمینار کا انعقاد کیا گیا جس سے خطاب کرتے ہوئے ریا ض حسین وسان اور دیگر نے کہا کہ آج کے اس جدید دور کی ٹیکنالوجی کو استعمال کرتے ہوئے ہر شہری صحافتی انداز میں اپنے موقف کو پھیلا رہا ہے اسی طرح سماجی تبدیلی کے لیے شہری کی ذمہ داری ہے کہ وہ خسرہ جیسے مرض کے خاتمے کے لیے مہم کو کامیاب اور اس سلسلے میں شعور بیدار کرنے کے لیے سماجی رابطوں کی ویب سائٹس کو مثبت طور پر استعمال کیا جائے۔

انہوں نے کہ 15 اکتوبر تا 27 اکتوبر تک ہر 09 ماہ تا 05 سال کے تک کی عمر کے بچوں کو خسرہ سے بچائو کے ٹیکے ضرور لگوائیں جائیں اس سلسلے میں لیڈی ہیلتھ ورکر ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہیں جو ہر گھر میں جاکر اس مرض کے خاتمے میں مدد گارو ہونگی ۔ انہوں نے صحافیوں، ریڈیو پاکستان، ایف ایم ریڈیو،ڈاکٹروں، اساتذہ، طلبہ و طالبات، سماجی ، غیر سماجی تنظیموں کے نمائندوں ، اسٹیک ہولڈر، مذہبی رہنمائوں، سیاسی افراد اور معززین شہر پر زور دیا کہ وہ اس مہم کے سلسلے میں ہر سطح پر شعور کی بیداری میں ضلعی انتظامیہ اور محکمہ صحت کے ساتھ شانہ بشانہ ساتھ کھڑے ہوں تاکہ ہم اپنے آنے والے مستقبل کے معماروں کو بہتر صحت فراہم کرسکیں ۔

اس موقع پر اے ڈی ایچ او ڈاکٹر مشتاق سولنگی، ایم ایس ڈاکٹر محمد حسین ابڑو، روٹیرین شجاعت احمد صدیقی، فوکل پرسن ڈاکٹر محمد باقر یوسف جتوئی، ڈاکٹر انیل کمار، راجیش جے پار ، ڈاکٹر اعجاز سموں، یونیسیف کے نسیم عباس، خیر محمد خمیسانی، ڈاکٹر عمران مہر ، ڈاکٹر اکبر ، ڈاکٹر روچا رام اور دیگر نے بھی سیمینار سے خطاب کیا۔