Courtesy: اردوپوانٹ

وفاقی حکومت نے سندھ حکومت کو کم لاگت ہاؤسنگ اسکیم شروع کرنےکی پیشکش کر ڈالی۔تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے نی ا پاکستان ہاوسنگ اسکیم نامی منصوبے کے تحت 50 لاکھ گھر بنانے کا وعدہ کیا ہے۔اس منصوبے کا آغاز کر دیا گیا ہے جبکہ مختلف شہروں میں اس منصوبے کے تحت اراضی کی تلاش جاری ہے۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

دوسری جانب حکومت سندھ نے بھی اہلیان سندھ کو بڑی خوشخبری سنا دی ہے۔صوبائی حکومت نے وفاقی حکومت کے منصوبے کی طرز پر ہاوسنگ منصوبہ شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔اس مقصد کے لیے حیدر آباد، سکھر،لاڑکانہ اور نواب شاہ سمیت متعدد شہروں میں 10 ہزار گھر تعمیر کئیے جائیں گے جبکہ پہلی قرعہ اندازی کے تحت 10 ہزار گھر مفت تقسیم کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

اس منصوبے کا نام محترمہ بینظیر بھٹو سے منسوب کیا گیا ہے اور اس کا نام بینظیر ہاوسنگ اسکیم رکھا گیا ہے۔دوسری جانب بلاول بھٹو زرداری نے نواب وسان کو ترقیاتی کام تیز رفتاری سے مکمل کرنے کی ذمہ داری سونپی ہے۔اس حوالے سے مزید خبر یہ ہے کہ پہلے ریکارڈ مرتب کیا جائے گا جس کے بعد گھروں کی تقسیم عمل میں آئے گی۔،دوسری جانب اسی منصوبے کے تحت حکومت سندھ غریبوں میں 20 ہزار مفت پلاٹ بھی تقسیم کرے گی۔

اس حوالے سے تازہ ترین خبر یہ ہے کہ مذکورہ منصوبے پر سندھ حکومت کو وفاق کی حمایت مل گئی۔چیئرمین وزیراعظم ٹاسک فورس کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت اسکیم کانام تجویزکرے،وفاق کوکوئی اعتراض نہیں ہوگا۔سندھ حکومت ہاؤسنگ اسکیم کے لیے ٹاسک فورس بنائے۔سندھ حکومت کم لاگت کی ہاؤسنگ اسکیم اپنےذرائع سےتعمیرکرے۔اس پر وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شا کا کہنا تھا کہ ہاؤسنگ اسکیم کا معاملہ صوبائی کابینہ کے آیندہ اجلاس میں رکھیں گے۔