Courtesy: اردو پوانٹ

پنجاب کے دیگر شہروں کی طرح تحصیل کلر سیداں میں بھی 15 سے 27 اکتوبر کے دوران خسرہ سے بچاؤ کے حوالے سے انتظامات کو آخری شکل دے دی گئی ۔12 روزہ اس خصوصی مہم کے دوران 6 ماہ سے 7 سال تک کے تقریبا34489 بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگائے جائیں گے۔ایسے بچے جن کو پہلے خسرے کا حفاظتی ٹیکہ لگ چکا ہو،ان کو بھی مہم کے دوران ٹیکہ لگایا جائے گا۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

مہم کے دوران لگایا جانے والا ٹیکہ حفاظتی ٹیکوں کے کورس پر اثر انداز نہیں ہو گا۔ ڈی ڈی ایچ او ڈاکٹر سید عابد حسین شاہ نے’’اے پی پی ‘‘کو بتایا کہ اس مہم کو بھر پور طریقے سے چلانے کیلئے 26 آؤٹ ریچ اور 10فکسڈ ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔یہ ٹیمیں محکمہ صحت اور عالمی ادارہ صحت کے مقامی،ضلعی اور صوبائی افسران کی نگرانی میں کام کریں گی۔اس مہم میں محکمہ صحت کے 37 سکلڈ پرسنز،37 ٹیم اسسٹنٹنس ، ٹیم میں کوالیفائیڈ تربیت یافتہ ماہرین،اور 210 سوشل موبلائزر،گیارہ یوسیز ایم او ز،11 اے ای ایف آئی پرسنز شامل ہونگے۔خسرہ مہم میں سرگرم ٹیمیں تحصیل کے تمام گاؤں اور محلوں میں پہنچیں گی اور 27 اکتوبر تک اگر یہ ٹیمیں کسی جگہ نہ پہنچ پائیں تو اپنے قریبی مرکز صحت میں جا کر ٹیکہ لگوایا جا سکتا ہے۔